متّی 4

1

تب روح یسوع کو جنگل میں شیطان سے آزمانے کیلئے لے گئی۔

2

یسوع نے چالیس دن اور چالیس رات کچھ نہ کھایا تب اسے بہت بھوک لگی۔

3

تب اسکا امتحان لینے کیلئے شیطان نے آکر کہا، “اگر تو خداکا بیٹا ہی ہے تو ان پتھروں کو حکم کر کہ وہ روٹیاں بن جائیں۔”

4

یسوع نے اس کو جواب دیا یہ” صحیفہ میں لکھا ہے کہ انسان صرف روٹی ہی سے نہیں جیتا ، بلکہ خدا کے ہر ایک کلام سے جو اس نے کہیں۔” استثناء ۳:۸

5

تب شیطان یسوع کو مقدس شہر یروشلم میں لے جاکر ہیکل کے انتہائی بلندجگہ پر کھڑا کرکے کہا۔

6

شیطان نے کہا ،” اگر تو خدا کا بیٹا ہے تو نیچے کود جا کیوں؟ اسلئے کہ صحیفہ میں لکھا ہے ، خدا اپنے فرشتوں کو تیرے لئےحکم دیگا کہ پتھروں سے تیرے پیر کو چوٹ نہ آئے اور وہ اپنے ہاتھوں پر تجھے اٹھا لینگے “ زبور۱۹:۱۱-۱۲

7

تب یسوع نے جواب دیا یہ بھی کلام میں لکھا ہے خدا وند اپنے خدا کا تو امتحان نہ لے۔” استثناء ۱۶:۶

8

پھر اس کے بعد شیطان یسوع کو کسی پہاڑ کی اونچی چوٹی پر لے جاکر دنیا کی تمام حکومتوں کو اور انکی شان و شوکت کو دکھایا ۔

9

شیطان نے اس سے کہا، “ اگر تو میرے سامنے سجدہ کرے تو میں تجھے یہ تمام چیزیں عطا کرونگا۔ “

10

یسوع نے شیطان سے کہا، “ اے شیطان ! تو یہاں سے دور ہو جا ایسا کلام میں لکھا ہوا ہے۔ خداوند اپنے خدا کو ہی سجدہ کرنا اور اس ایک ہی کی عبادت کرنا۔” استثناء ۱۳:۶

11

تب ابلیس یسوع کو چھوڑ کر چلا گیا۔ پھر فرشتے آئے اور اسکی خدمت میں لگ گئے۔ (مرقس ۱:۱۴-۱۵؛ لوقا ۴:۱۴-۱۵)

12

یسوع کو یہ بات معلوم ہوئی کہ یوحنا کو قید میں بند کر دیا گیا ہے جس کی وجہ سے یسوع گلیل کو واپس لوٹ گیا۔

13

یسوع ناصرت میں نہیں رہے اورجھیل سے قریب کفر نحوم کے گاؤں میں جا کر رہنے لگے۔اور یہ گاؤں زُبولون اور نفتالی کی سرحد وں سے قریب ہے۔

14

یسعیاہ نبی کے ذریعہ سے خدا کی کہی ہوئی بات اس طرح پوری ہوئی :

15

“ زُبُولون سرحد، نفتالی سرحد، سمندر کی طرف جانے والی سڑک کے کنارے کی زمین یردن ندی کے پچھم سرحد گلیل کے غیر یہودی لوگوں کو دیکھو

16

لوگ اندھیرے میں زندگی گزار ہے تھے۔ تب انکو ایک بڑی تیز روشنی نظر آئی قبر کی طرح گھپ اندھیرے ملک میں زندگی گزارنےوالے ا ن لوگوں کے لئے روشنی نصیب ہوئی “ یسعیاہ ۹:۱-۲

17

تب آسما ن سے ایک آواز آئی “ یہ وہ میرا پیارا چہیتا بیٹا ہے اور اس سے میں بہت خوش ہوں۔” (مرقس ۱:۱۲-۱۳؛ لوقا ۴:۱-۱۳)

18

گلیل جھیل کے کنا رے پر یسوع ٹہل رہے تھے۔ وہ شمعون ( اسی کو پطرس کے نام سے یاد کیا جا نے لگا ) اور شمعون کا بھا ئی اندر یاس نام کے دو بھا ئیوں کو دیکھا۔ یہ دونوں مچھیرے اس دن جھیل کے کنارے پر جال ڈال کر مچھلیاں پکڑ رہے تھے۔

19

یسوع نے ان سے کہا ،” آؤ میرے پیچھےہو لو میں تم کو دوسری طرح کا ماہی گیر بناؤنگا۔ تمکو جو جمع کرنا ہے وہ مچھلیاں نہیں بلکہ لوگوں کو۔”

20

فورًا شمعون اور اندریاس اپنے جالوں کو چھوڑکر اس کے پیچھے ہو لئے۔

21

یسوع گلیل کی جھیل کے کنارے آگے چلنے لگے تو زبدی کے دو بیٹے یعقوب اور یوحنا دونوں کو دیکھا۔وہ دونوں اپنے باپ زبدی کے ساتھ کشتی پر سوار تھے۔اور وہ مچھلیوں کا شکار کرنے کیلئےاپنے جالوں کی مرمت کر رہے تھے یسوع نے انکو بلایا۔

22

تب وہ کشتی کو اور اپنے باپ کو چھوڑ کر یسوع کے ساتھ ہولئے (لوقا ۶:۱۷-۱۹)

23

یسوع گلیل کے تمام علاقوں میں گیا۔ یسوع یہودیوں کی عبادت گاہوں میں تعلیم دینے لگا اور خدا کی بادشاہت کے بارے میں خوش خبری کی منادی دینے لگا۔یسوع تمام لوگوں کی بیماریوں اور خرابیوں کو دُور کر کے شفاءدی۔

24

یسوع کی خبریں تمام ملک سوریہ میں پھیل گئی۔لوگ تمام بیماروں کو یسوع کے پاس لانا شروع کئے۔وہ لوگ جو مختلف قسم کے امراض اور اور تکالیف میں مبتلا تھے۔اور بعض تو شدید تکلیف اور درد میں بے چین تھے۔اور بعض بد روحوں کے اثرات سے متاثر تھے ان میں بعض مرگی کی بیماری میں مبتلا تھے۔اور بعض فالج کے مریض تھے یسوع نے ان سب کو شفاء بخشی۔

25

[This verse may not be a part of this translation]